شاعری

pictureملت کا پاسبان ہے محمد علی جناح

منظوم نظموں کا مجموعہ

مرتب : خورشید ربانی
ناشر : اکادمی ادبیات پاکستان
قیمت: 250 روپے
تشکیل ای بک: نوید فخر

سید حسن عباس زیدی

قائدِاعظم محمد علی جناحؒ

تو بات کا دھنی تھا ارادے کا پختہ تھا
تھا لاجواب سامنے تیرے جو آتا تھا

جس بات پر اڑا وہی کر کے دکھا دیا
تو نے مخالفین کو نیچا دکھا دیا

آرام کا خیال نہ دُکھ درد کا خیال
تو فکرِ قوم میں رہا کرتا تھا بس نڈھال

قائدؒ ہے تو ہی قوم کا کچھ اس میں شک نہیں
خدمات اور خلوص میں تیرے تو شک نہیں

بے جان گویا لیگ تھی سوئی ہوئی تھی قوم
مایوسیوں کے بحر میں ڈوبی ہوئی تھی قوم

بالآخر کامیاب تو نے لیگ کو کیا
پھر لیگ ہی نے قوم کو بیدار کر دیا

برسوں کا کام تو نے ہی آسان کر دیا
پیہم عمل سے قوم کو حیران کر دیا

آزاد مملکت کی بِنا تو نے ڈال دی
کشتی بھنور سے قوم کی تو نے نکال دی

پرچم جو سرنگوں تھا بلند تو نے کر دیا
تنظیم و اتحاد کا پھر سے سبق دیا

تُجھ پر سدا ہی ناز کرے گی ہماری قوم
دُنیا میں سر بلند ہوئی ہے ہماری قوم

اب رہبری کی پھر سے ضرورت ہے قوم کو
تنظیم و اتحاد کی حاجت ہے قوم کو

احسان اصل میں یہ اُتارا نہ جائے گا
قربانیوں کو تیری بھلایا نہ جائے گا

خدمات کا صلہ تجھے خالق عطا کرے
درجے بُلند خالقِ اکبر عطا کرے

ہے یہ دُعا کہ روح کو آئے تےری قرار
ہے آج تیری یاد میں کل قوم سوگوار

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21 |
| 22 | 23 | 24 | 25 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں