شاعری

pictureملت کا پاسبان ہے محمد علی جناح

منظوم نظموں کا مجموعہ

مرتب : خورشید ربانی
ناشر : اکادمی ادبیات پاکستان
قیمت: 250 روپے
تشکیل ای بک: نوید فخر

پروین شاکر

قائدکے لیے چند حرف

بے آب آئینوں پہ طلسمِ نظر کُھلا
چشمِ فسوں زدہ سے کوئی خواب گر کُھلا

اک شخص کو کلیدِ محبت عطا ہوئی
تنہائیوں پہ شہرِ رفاقت کا در کُھلا

اک سرخوشی میں چلتے رہے اس کے ساتھ ساتھ
منزل پہ آ گئے تو کمالِ سفر کُھلا

ٹھنڈا ہوا ادھر عَلم جاں فروشگاں
شہرِ وفا میں روح کا پرچم اِدھر کُھلا

اک حرفِ سبز شاخِ بدن پر چمک اُٹھا
میری زمیں پہ اپنے لہو کا ہنر کُھلا

ننھے سے اک ستارے کی کیا روشنی مگر
پرچم پہ آ گیا تو بہت چاند پر کُھلا

وہ وقت تھا کہ تھی بھی ضروری ردائے سبز
آندھی میں کون دیکھتا مٹی کا سر کُھلا

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21 |
| 22 | 23 | 24 | 25 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں