شاعری

pictureملت کا پاسبان ہے محمد علی جناح

منظوم نظموں کا مجموعہ

مرتب : خورشید ربانی
ناشر : اکادمی ادبیات پاکستان
قیمت: 250 روپے
تشکیل ای بک: نوید فخر

بہرام ساحل

کس سے پوچھیں کسی منزل کا پتا تیرے بعد
تجھ سا ابھرا نہ کوئی راہنما تیرے بعد

آہ! دیکھے کوئی بے چارگی ہم لوگوں کی
دربدر، خاک بسر ، آبلہ پا ، تیرے بعد

دب گئے سینوں میں سب ولولے آزادی کے
سلسلہ جبر کا اک ایسا چلا تیرے بعد

فرق کچھ رہبر و رہزن میں بہت مشکل تھا
ہر کوئی نام تیرا لیتا رہا تیرے بعد

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21 |
| 22 | 23 | 24 | 25 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں