شاعری

pictureملت کا پاسبان ہے محمد علی جناح

منظوم نظموں کا مجموعہ

مرتب : خورشید ربانی
ناشر : اکادمی ادبیات پاکستان
قیمت: 250 روپے
تشکیل ای بک: نوید فخر

احمد ظفر

عظیم قائد
عظیم قائدؒ
بہار کا ذکر ہو رہا ہے
کہ ہم ترا نام لے رہے ہیں
قیادتوں کے اسی چمن میں
تو انقلاب حیات کا باب اولیں ہے
گلاب یادوں کے چاروں جانب مہک رہے ہیں
حروف شاخِ وطن کے سارے
پرند بن کر چہک رہے ہیں

عظیم قائدؒ
تجھے جو سوچیں تو یہ کہیں ہم
کہ تےری صورت میں دستِ فطرت نے
ہم کو انعام دے دیا تھا
گھنے اندھیرے میں ہر مسافر بہک رہا تھا
سفر کی کوئی جہت نہیں تھی
مگر اسی رات کے اُفق پر
تو پورے مہتاب کی گواہی بنا ہوا تھا

عظیم قائدؒ
قیادتوں کے اسی چمن میں
نہ تجھ سا کوئی یہاں ہوا ہے
نہ تجھ سا کوئی یہاں کہیں ہے
عطائے ربِ جلیل ہے مملکت ہماری
کہ تو وسیلہ ہے اس کرم کا

عظیم قائدؒ
فریب کاروں نے یوں تو بدلے کئی لبادے
مگر وہی ہم وہی ارادے
رواں رہے منزلوں کی جانب رواں رہیں گے
جو شاخِ گل کی طرف بڑھے گا
خزاں کا وہ ہاتھ کاٹ دیں گے
غنیم لمحوں کو مات دی تھی
غنیم لمحوں کو مات دیں گے

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21 |
| 22 | 23 | 24 | 25 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں